Title here

‏‎ریحام خان کی کتاب سے اقتباسات

دُوسری رات میں بستر پر لیٹی ھُوئی تھی کہ اچانک مجھے اپنے پیچھے کچھ نوکیلی چیز محسوس ھوئی میں نے ڈر کے مارے مڑ کر دیکھا تو خان صاحب تیل کی شیشی ھاتھ میں لیے مسکراتے نظر آئے.

میں شرما سی گئی اور پوچھا یہ تیل کی شیشی کس لیے ؟؟

تو خان صاحب نے کہا ، دروازے کی چررررررررررررررررر ختم کرنے کے لیے۔


ایک دن میں نے کہا مجھے گھومنے جانا ہے۔ خان صاحب ایک گلاس لے کر آئے اور ایک گھونٹ خود بھرا اور باقی مجھے پلا دیا۔ پھر ہم میاں بیوی سارا دن گھومتے رہے۔


‏ایک رات عمران بہت جوش میں آئےاور بولےدروازہ، لائٹ، کھڑکی بند کرکے میرےپاس آؤ، مجھےشرم آئی، سوچا شاید آج موڈ ہے، کمرےمیں مکمل اندھیرا تھا دل دھڑک رہاتھا انہوں نےمیرا ہاتھ پکڑا، اور بولے یہ دیکھو میری نئی گھڑی اندھیرے میں بھی اس میں ٹائم نظر آتا ہے
صفحہ نمبر 263


ایک دن میں بکری کی مینگنیاں اٹھا رہی تھی اتفاق سےعمران بھی آگئے، پوچھنےلگےیہ کیا ہے؟ میں نےکہہ دیا عقل کی گولیاں ہیں، یہ سنتےہی جھٹ چار گولیاں کھاگئے، پھر منہ بسورتے ہوئےبولے یہ تو بکری کی مینگنیاں ہیں۔
میں نےجواب دیا "دیکھا آگئی نا عقل"


‏اک دن میں نے خان صاحب سے پوچھا پہلے تو آپ کافی صحت مند ہوتے تھے آجکل کافی کمزور ہو گئے ہیں کیا وجہ ہے،؟
خان صاحب نےاک نظر مرادسعید کی طرف دیکھا پھر ہنستے ہوئے نظریں جھکا لیں،
صفحہ نمبر 49


نشے کی حالت میں اکثر خان صاحب مجھے مراد سعید سمجھ لیتے جب میں بتاتی ایسے نکاح ٹوٹ جاتا ہے تب وہ مجھے غور سے دیکھتے اور sorry کہ کر سو جاتے
‏صفہ نمبر 219


سی پیک کے معاہدے پر دستخط ہو چکے تو اس رات خان صاحب بہت غصے تھے, سائیڈ ٹیبل پر پڑی شیشی سے پاؤڈر کی تین لمبی لیکیریں لگائیں اور ایک ہی سانس میں کھینچ گئے پھر چیخے یہ نمک دانی کس کنجر نے یہاں رکھدی, میں بولی حضور صبح آپ نے ہی انڈے پر نمک چھڑکا تھا.


ایک دن میں نے کہا مجھے گھومنے جانا ہے۔ خان صاحب ایک گلاس لے کر آئے اور ایک گھونٹ خود بھرا اور باقی مجھے پلا دیا۔ پھر ہم میاں بیوی سارا دن گھومتے رہے۔


‏کپڑے دھونے کے دوران خان صاحب کی شلوار والی جیب سے اکثر مراد سعید کی تصویر نکلتی تھی،
‏صفحہ نمبر 421


‏ایک رات عمران بہت جوش میں آئےاور بولےدروازہ، لائٹ، کھڑکی بند کرکے میرےپاس آؤ، مجھےشرم آئی، سوچا شاید آج کوئی اچھا حکیم ملا ہے کمرےمیں مکمل اندھیرا تھا دل دھڑک رہاتھا انہوں نےمیرا ہاتھ پکڑا، اور بولے یہ دیکھو میری نئی گھڑی اندھیرے میں بھی اس میں ٹائم نظر آتا ہے صفحہ نمبر 263


شادی سے چند روز قبل ایک دن فون پر مجھ سےپوچھنے لگے "کیا میں کبھی تمارے خواب میں آتا ہوں؟"
میں نے جواباً کہا نہیں۔ ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﻣﯿﮟ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﺁﯾﺘﮧﺍﻟﮑﺮﺳﯽ ﭘﮍﮪ ﮐﺮ ﺳﻮتی ہوں۔ یہ سن کر ناجانے کیوں غصے میں فون ہی بند کر دیا۔


ایک میں فون پہ بات کر رہی تھی کہ اچانک کمرے میں آ گئے
میں نے اپنی سہیلی کو بتایا کہ میاں کمرے میں آ ے ہیں
یہ سنتے ہی چارپائی کے نیچے گھس گئے اور بولے پہلے اس کو نکالو پھر میں باہر آؤں گا


ایک رات عمران بہت غصے میں بستر سے اٹھے اور کہنے لگے کہ میں آج سارے کا سارا پاکستان ٹھیک کر کے ہی گھر لوٹوں گا مجھ سے اب اور برداشت نہیں ہوتا۔
میں نے بس اتنا کہا پاکستان بعد میں ٹھیک کریئے گا پہلے شلوار تو اپنی پہن لیں ۔ کل سے میری پہن کر گھوم رہے ہیں۔


‏طلاق کی سب سے بڑی وجہ عمران خان صبح اٹھ کر نہانے کی بجاے پورے جسم پر گیلی ٹاکی پھیر لیتے تھے
صفہ نمبر : 534


نشے کی حالت میں اکثر خان صاحب مجھے مراد سعید سمجھ لیتے جب میں بتاتی ایسے نکاح ٹوٹ جاتا ہے تب وہ مجھے غور سے دیکھتے اور sorry کہ کر سو جاتے
‏صفہ نمبر 219


خان صاحب رات کے تیسرے پہر اٹھ کر نہانے جاتے تھے شیروانی پہن کر مجھے نیند سے جگا کر اکثر پوچھتے ! لگ رہا ہوں نہ وزیر اعظم ؟؟


کھبی کھبار خان صاحب میرا نام بھول جاتے اور مختلف ناموں سے مجھے پکارتے تھے جیسے جمائما، سیتا ، زینت ، مراد اور بہت سے ایسے نام مگر حد تو تب ہوئی جب میری آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر رومانٹک انداز میں بولے شیخ رشید آج غضب لگ رہے ہو۔


‏تحریک انصاف کے ٹکٹ کے خواہشمند پہلے 100 روپے کا بیان حلفی جمع کروائیں کہ وہ ریحام خان کی کتاب کبھی نہیں پڑھیں گے۔
کور کمیٹی قراردار

بیڑہ غرق ہو اس کتاب کا ! جب سے اس کے اقتباسات عام ہوئے ہیں، پی ٹی آئی کا کوئی پپو سا ورکر نظر آجائے تو ہنسی چھوٹ جاتی ہے

‏ریحام خان سے زیادہ عقلمند عورت میں نے آج تک نہیں دیکھی
جس کی کتاب لکھی پروموشن بھی انہی لوگوں سے کروائی

‏‎اور خریدیں گے بھی یہ ہی لوگ۔۔۔۔

Posted Status in Fun & Ent.
Recommended